• Dastaan Khatam Honey Wali Hai, Tum Meri Akhri Muhabbat Ho - Jaun Elia

    تم حقیقت نہیں ہو حسرت ہو
    جو ملے خواب میں وہ دولت ہو​

    میں *تمھارے ہی دم سے زندہ ہوں
    مر ہی جاؤں جو تم سے فرصت ہو​

    تم ہو خوشبو کے خواب کی خوشبو
    اور اتنی ہی بے مرّوت ہو​

    تم ہو پہلو میں *پر قرار نہیں
    یعنی ایسا ہے جیسے فرقت ہو​

    تم ہو انگڑائی رنگ و نکہت کی
    کیسے انگڑائی سے شکایت ہو​

    کس طرح چھوڑ دوں* تمھیں *جاناں
    تم مری زندگی کی عادت ہو​

    کس لیے دیکھتی ہو آئینہ
    تم تو خود سے بھی خوبصورت ہو​

    داستاں* ختم ہونے والی ہے
    تم مری آخری محبت ہو​

    Download Jaun Elia Poetry Application
 
 
Copyright © 2000 - 2008, YourSiteForums.com. All Rights Reserved.
No Duplication Permitted! CompleteVB skins shared by PreSofts.Com
CompleteVB skins shared by PreSofts.Com